Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / اہم ترین / امریکا نے کوئی ڈومور کا مطالبہ نہیں کیا، وزیرخارجہ

امریکا نے کوئی ڈومور کا مطالبہ نہیں کیا، وزیرخارجہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ امریکی وزیرخارجہ سے ملاقات بہت اچھے ماحول میں ہوئی اور امریکا کی جانب سے کوئی ڈومور کا مطالبہ نہیں ہوا۔
امریکی وفد سے ملاقات کے بعد پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پاک امریکا تعلقات میں سرد مہری تھی لیکن آج ملاقات میں ماحول بدلا ہوا تھا اور مذاکرات میں پاکستان نے حقیقت پسندانہ موقف پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے پاکستان کا نقطہ نظر خودداری اور بردباری سے پیش کیا جب کہ پاکستان امریکا سے باہمی احترام اور اعتماد پر مبنی پائیدار تعلقات چاہتا ہے۔
امریکا سے تعلقات

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کافی عرصے بعد امریکی عہدیدارنے پاکستان کا دورہ کیا ہے، امریکی وزیرخارجہ نے واشنگٹن آنے کی دعوت دی ہے جسے قبول کرلیا ہے اور جب اقوام متحدہ کے اجلاس میں جاؤں گا توامریکی وزیرخارجہ سے ملاقات کروں گا۔ انہوں نے کہا کہ 300 ملین ڈالر روکنے کی خبر نئی نہیں تھی اور امریکا سے تعلق صرف لینے دینے کا نہیں اور امریکا سے پیسوں کی نہیں اصولوں کی بات کی، آج کی ملاقات سے دوطرفہ تعلقات میں تعطل ٹوٹ گیا۔
مذاکرات کا اگلا دور

وزیرخارجہ نے کہا کہ امریکا کے ساتھ مذاکرات کا اگلا دور واشنگٹن میں ہوگا لیکن امریکا کوکہا کہ بلیم گیم سے کچھ حاصل نہیں ہوگا، امریکا سے کئی معاملات پرسوچ مختلف ہوگی مگر بعض مشترکہ مقاصد ہیں تاہم پاکستان کا مفاد سب کوعزیز اورمقدم ہے اور پاکستان کی قربانیوں سے کوئی غافل نہیں۔
امریکی پالیسی میں تبدیلی

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ امریکا نے اپنی پالیسی کا ازسرنوجائزہ لیا ہے، امریکا چاہتا ہے پاکستان افغانستان سے متعلق بات چیت آگے بڑھانےمیں مدد دے جب کہ پاکستان افغانستان میں امن واستحکام کے فروغ کیلیے کوششیں جاری رکھے گا لیکن افغانستان کا حل فوجی نہیں بلکہ سیاسی مذاکرات میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ میرا پہلا غیر ملکی دورہ بھی افغانستان کا ہوگا۔
افغان طالبان سے مذاکرات

وزیرخارجہ نے کہا کہ آج عندیہ ملا ہے امریکا افغان طالبان کے ساتھ مذاکرات کے لیے ذہنی طورپرتیارہے، طالبان کے ساتھ مذاکرات میں امریکی محکمہ خارجہ لیڈ کرے گا جب کہ افغان امن میں پاکستان کی دلچسپی ہے کیوں کہ خطے کی ترقی اورخوشحالی افغان امن سےجڑی ہوئی ہے اور جب افغانستان کیساتھ ملکرکام کیا ہے تودونوں ممالک کوفائدہ ہوا ہے۔
سیاسی وعسکری قیادت کی ہم آہنگی

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ تاثردیا جاتا تھا امریکی پہلے وزیراعظم ہاؤس پھرجی ایچ کیو میں ملاقاتیں کرتے تھے لیکن آج امریکیوں کو واضح پیغام دیا کہ ہم سب ایک پیج پرہیں، آج ملاقات میں آرمی چیف، ڈی جی آئی ایس آئی بھی موجود تھے، پاکستان کی عسکری و سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے۔
نئی حکومت کی ترجیحات

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ نئی حکومت کی ترجیح سماجی و معاشی ترقی اور عوام کی بہتری ہے، ہم ایک نئی سوچ کے ساتھ آگے بڑھنے کا ارادہ رکھتے ہیں اور ہم بھی اپنی پالیسیوں کا ازسرنو جائزہ لیں گے جب کہ پڑوسیوں کے ساتھ مثبت تعلقات رکھنا چاہتے ہیں، اس ایجنڈے کوآگے بڑھانے کیلیے ہماری خارجہ پالیسی کومعاون بننا ہوگا۔

About Admin

Check Also

supremecourt

العزیزیہ وفلیگ شپ ریفرنسزکی منتقلی کے خلاف نیب کی درخواست خارج

اسلام آباد(بیورو رپورٹ) سپریم کورٹ نے نوازشریف کے خلاف زیرسماعت العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: