Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / دلچسپ و عجیب / روسی والدین لالچی بیٹے کےلیے اپنی ہلاکت کا ڈرامہ رچانے پر مجبور

روسی والدین لالچی بیٹے کےلیے اپنی ہلاکت کا ڈرامہ رچانے پر مجبور

سوچی: روس میں 22 سالہ شقی القلب نوجوان کو اپنے خاندان کے اقدامِ قتل میں گرفتار کرلیا گیا جس کےلیے اس کے والدین نے بھی اپنی موت کا ڈرامہ رچایا۔
یہ ہولناک کہانی روسی علاقے سوچی کے اس نوجوان کی ہے جو اپنے والدین اور بہنوں کو قتل کروا کر ساری جائیداد ہتھیانا چاہتا تھا۔ روسی میڈیا کے سامنے اس نے اعتراف کیا کہ اس نے اپنے اس ہولناک منصوبے کےلیے خود کو آمادہ کیا لیکن ایک مرتبہ ناکامی کے بعد اس نے اپنے پورے خاندان کو موت کے گھاٹ اتارنے کےلیے کرائے کے قاتل (ہِٹ مین) کی تلاش شروع کردی اور اس کا ذکر اپنے ایک قریبی دوست سے بھی کردیا اور اس سے قاتل کی تلاش میں مدد کی درخواست کی۔ تاہم اس کے دوست نے پولیس کے سامنے جاکر اس کا سارا منصوبہ بیان کردیا جس کے بعد پولیس حرکت میں آگئی۔
اس کے بعد لڑکے کے اسی دوست نے ایک پولیس اہلکار کو اجرتی قاتل کے روپ میں پیش کیا اور اس کی ملاقات لڑکے سے کرائی گئی۔ اس ملاقات میں اس کے سفلی مقاصد مزید واضح ہوگئے اور اس نے قاتل کے روپ میں موجود پولیس افسر کے سامنے گھروں کے کمروں کا محلِ وقوع، چوکیدار، کتے اور سیکیورٹی کیمروں کی تفصیل بیان کی۔ اس نے یقین دلایا کہ کامیاب قتل کی صورت میں پولیس اہلکار کو 55 لاکھ روپے ادا کرے گا۔
اگلا مرحلہ قدرے مشکل تھا جس میں پولیس نے لڑکے کے والدین پر یہ خوفناک انکشاف کیا کہ خود ان کی اولاد ان کی جان کے درپے ہے۔ پہلے تو والدین کو یقین نہ آیا لیکن پولیس کے اصرار پر انہوں نے اپنے لڑکے کو رنگے ہاتھوں گرفتار کروانے کے منصوبے کی ہامی بھرلی اور انہوں نے میک اپ کروا کر بے سدھ ہوکر اپنی جعلی موت کی تصاویر بنوائیں۔
اس کے بعد یہ تصاویر لڑکے کے سامنے رکھی گئیں جن میں اس کے والدین اور بہنوں کی لاشوں سے خون بہتا دکھائی دے رہا اور ڈرامے کے تحت ان کے گلے کاٹے گئے تھے۔ بے رحم نوجوان نے ساری تصاویر پر خوشی کا اظہار کیا اور پولیس اہلکار سے وعدہ کیا کہ وراثت کی رقم ملتے ہی اس کی اجرت ادا کردی جائے گی۔ لیکن اس کےبعد یہ ڈرامہ ختم ہوا اور وہ اگلے لمحے پولیس کی گرفت میں تھا۔
اپنے بیان میں اس نے کہا کہ والدین اسے رقم نہیں دیتے تھے اور اس نے قتل کی منصوبہ بندی کا اعتراف بھی کرلیا۔ اس نے مزید بتایا کہ وہ پہلے بھی تین مرتبہ قتل کی کوشش کی تھی۔ پہلے وہ رات کے اندھیرے میں انہیں قتل کرنے کےلیے گیا تو والدین جاگ رہے تھے۔ دوسری مرتبہ اس نے چائے میں خواب آور گولیاں ڈالیں جو کارگر ثابت نہ ہوئیں۔ تیسری مرتبہ اس سنگ دل نے کار میں لگا تھرمامیٹر توڑ ڈالا تاکہ وہ پارے کے زہریلے اثرات سے ہلاک ہوجائیں لیکن اس بار بھی منصوبہ ناکام ہوگیا۔
روسی میڈیا کے مطابق سنگ دل بیٹے کی گرفتاری کے بعد عدالتی کارروائی جاری ہے اور سوچی کو 15 سال قید بامشقت کی سزا ہوسکتی ہے۔

About Admin

Check Also

کام کے دباؤ سے نجات دلانے والی جیل

سیئول، کوریا(مانیٹرنگ ڈیسک) جنوبی کوریا کے باشندے اندھادھند کام کرکے شدید تناؤ اور بیماریوں کے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: