Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / بین الاقوامی / کرپشن الزامات میں اسرائیلی وزیراعظم کے ساتھی ریاستی گواہ بننے پر تیار

کرپشن الزامات میں اسرائیلی وزیراعظم کے ساتھی ریاستی گواہ بننے پر تیار

بیت المقدس: کرپشن کے الزامات میں اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاہو کے قریبی ساتھی شلوموفلبران کے خلاف ریاستی گواہ بننے پر تیار ہوگئے ہیں جس کے باعث بنجمن نیتن یاہو کی طویل مدت وزارت خطرے میں پڑگئی ہے۔
پیر کے روز ٹیلی کام کمپنی بیزاق میں بدعنوانی کے جرم میں گرفتار ہوئے اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے قریبی ساتھی سمجھے جانے والے کمیونی کیشن کے وزیر شلوموفلبر کی وفاداریاں اسرائیلی وزیراعظم کے ساتھ تبدیل ہوگئی ہیں۔
بین الاقوامی میڈیا کے مطابق اسرائیل میں بیزاق کمپنی میں ہونےوالی کرپشن اور بدعنوانیوں کے خلاف تحقیقات کا سلسلہ جاری ہے جس میں رواں ہفتے ٹیلی کمیونی کیشن کے وزیرشلومو فلبر کو حراست میں لیا گیا ہے۔ دوران حراست شلوموفلبر اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے خلاف ریاستی گواہ بننے پر تیار ہوگئےہیں۔ شلومو فلبر کی وفاداریاں اسرائیلی وزیراعظم کے ساتھ تبدیل ہونے کے بعد بنجمن نیتن یاہو کیلئےاسے بڑادھچکا قراردیاجارہا ہے۔
واضح رہے کہ بیزاق کمپنی کے مالکان پر الزام ہے کہ بیزاق کمپنی کے زیر نگرانی ایک نیوز ویب سائٹ نےبہت سے فوائد کے بدلے بنجمن نیتن یاہو کی حکومت کی حمایت میں کوریج کی ہامی بھری تھی، بنجمن نیتن یاہو کا نام براہ راست اس کیس میں نہیں ہے لیکن پھر بھی ان سے اس حوالے سے سوالات کیے جانے کی توقع ہے۔ دوسری جانب کمپنی کے مالکان نے اپنےاوپر لگنے والے الزامات کی تردید کردی ہے۔

About Admin

Check Also

ہندو سادھو آسارام کم سن لڑکی سے زیادتی کے مقدمے میں مجرم قرار

نئی دہلی: بھارتی عدالت نے معروف سادھو اور مذہبی پیشوا آسارام کو 16 سالہ لڑکی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: