Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / صعنت و تجارت / حکومتی اقدامات دھرے رہ گئے؛ جنوری میں ریکارڈ 5 ارب 60 کروڑ لاکھ ڈالر کی درآمدات

حکومتی اقدامات دھرے رہ گئے؛ جنوری میں ریکارڈ 5 ارب 60 کروڑ لاکھ ڈالر کی درآمدات

کراچی: درآمدات کو کنٹرول کرنے کے لیے حکومت کے اقدامات دھرے کے دھرے رہ گئے جب کہ سیکڑوں آئٹمز پر ریگولیٹری ڈیوٹی لگانے کے باوجود بیرون ملک سے اشیا خریدنے میں کمی نہ آسکی۔
جنوری میں درآمدات 19.4 فیصد کے نمایاں اضافے سے 5 ارب 60 کروڑ 70لاکھ ڈالر تک پہنچ گئیں جو کسی بھی ایک ماہ کے اندر درآمدات کی بلند ترین سطح ہے۔ اس دوران ماہانہ برآمدات ٹھوس مگر درآمدات کی نسبت 11 فیصد کے محدود اضافے سے 1ارب97کروڑ 10 لاکھ ڈالر تک پہنچ سکیں۔
درآمدات اور برآمدات میں بھاری عدم توازن کی وجہ سے صرف جنوری کی تجارت میں خسارہ 24.4 فیصد بڑھ کر 3 ارب 63 کروڑ 60 لاکھ ڈالر تک پہنچ گیا جس کے نتیجے میں رواں مالی سال کے ابتدائی 7 ماہ (جولائی تا جنوری) کا تجارتی خسارہ 21.55ارب ڈالر پہنچ گیا جو گزشتہ مالی سال کی اسی مدت میں 17ارب 35کروڑ 10 لاکھ ڈالر تھا، گزشتہ 7ماہ میں ایکسپورٹ 11.11فیصد کے اضافے سے 13ارب ڈالرکے قریب پہنچ سکی۔
واضح رہے کہ ایف بی آر نے اکتوبر 2017 میں 356اشیا پر ریگولیٹری ڈیوٹی نافذ کی تھی جبکہ دیگر 357 اشیا پر پہلے سے عائد ریگولیٹری ڈیوٹی کے ریٹس میں اضافہ کیاتھا، ان اقدامات سے امید تھی کہ ایک سال کے اندر درآمدات میں2ارب ڈالر تک کی کمی ہو گی مگر جنوری کے ڈیٹا سے لگتا ہے کہ ریگولیٹری ڈیوٹی نافذ کرنے کا کوئی فائدہ نہیں ہوا کیونکہ ماہانہ درآمدات پہلی بار ساڑھے 5ارب ڈالر کی حد عبور کر گئی ہیں۔
پاکستان بیورو شماریات کی جانب سے جاری اعدادوشمار کے مطابق جنوری 2018میں برآمدات 11.04 فیصد کے اضافے سے 1.971ارب ڈالر اور درآمدات 19.37فیصد بڑھ کر 5.607 ارب ڈالر تک پہنچ گئیں۔ اس طرح گزشتہ ماہ کی تجارت میں 3.636 ارب ڈالر کا خسارہ ہوا جو جنوری 2017 میں 2.922 ارب ڈالر کے تجارتی خسارے سے 24.44 فیصد زیادہ ہے۔
اعدادوشمار کے مطابق دسمبر 2017کے مقابلے میں گزشتہ ماہ برآمدات 0.30 فیصد کم اور درآمدات 14.20 فیصد زیادہ رہیں جس کی وجہ سے دسمبر کے مقابلے میں جنوری کا تجارتی خسارہ 23.97 فیصد زائدرہا، دسمبر میں برآمدات 1.977 ارب ڈالر، درآمدات4.91ارب ڈالر اور تجارتی خسارہ 2.93 ارب ڈالر رہا تھا۔
اعدادوشمار کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 7 ماہ (جولائی تا جنوری) کے دوران برآمدات 11.11 فیصد کے اضافے سے 12 ارب 96 کروڑ 60 لاکھ ڈالر رہیں جبکہ درآمدات 18.92 فیصد کے اضافے سے 34ارب 51 کروڑ 20 لاکھ ڈالر تک پہنچ گئیں، اس طرح ان 7 ماہ میں پاکستانی تجارت کو 24.18 فیصد کے اضافے سے 21ارب 54 کروڑ 60 لاکھ ڈالر کا خسارہ ہوا جب کہ گزشتہ مالی سال کے اسی عرصے میں برآمدات 11 ارب 67 کروڑڈالر، درآمدات 29 ارب 2 کروڑ 10 لاکھ ڈالر اور تجارتی خسارہ 17ارب 35 کروڑ 10 لاکھ ڈالر تھا۔

About Admin

Check Also

سی پیک منصوبوں میں مقامی افراد کو ترجیح دی، چینی سفیر

اسلام آباد: چینی سفیرنے کہاکہ سی پیک منصوبوں سے پاکستانی نوجوانوں کیلئے مواقع پیدا ہوں …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: