Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / صحت / خطرناک آپریشن میں بچے کے سر کی ہڈی کو متعدد حصوں میں علیحدہ کیا گیا

خطرناک آپریشن میں بچے کے سر کی ہڈی کو متعدد حصوں میں علیحدہ کیا گیا

کارڈف(مانیٹرنگ ڈیسک) غیرمعمولی بیماری کا شکار بچے ’’لیوہچنسن‘‘ کی کھوپڑی کی ہڈی کو متعدد حصوں میں علیحدہ کیا گیا اور پھر آہنی بولٹس کی مدد سے جوڑا گیا۔

ویلز، برطانیہ کے شہر کارڈف سے تعلق رکھنے والا 5 سالہ لیو ہچنسن پیدائشی طور پر ایک غیرمعمولی بیماری ’’کرینیوسائنوسٹوسس‘‘ (Craniosynostosis) میں مبتلا تھا۔ اس بیماری میں کھوپڑی کی نشوونما غیرمعمولی طورپر اگلے اور پچھلے حصے سے بڑھنے لگتی ہے جس سے دماغ پر دباؤ بڑھنے لگتا ہے اور مریض بینائی سے محروم ہونے کے ساتھ ساتھ دیگر پیچیدگیوں کا بھی شکار ہوسکتا ہے۔

لیوہچنسن کی ماں جورجیا کا کہنا ہے کہ اپنی پہلی اولاد کے ساتھ اس بیماری کی خبر نے اسے بہت دلبرداشتہ کیا۔ ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ گزرتے وقت کے ساتھ لیو کی بینائی ضائع ہوجائے گی جبکہ وہ دیگردماغی پیچیدگیوں کا شکار بھی ہوسکتا ہے۔

جورجیا کا کہنا تھا کہ لیو کی پہلی سرجری 7 ماہ کی عمر میں کی گئی تھی۔ پہلی سرجری کے دو سال بعد لیو کے اعصاب پر ورم ہونے لگا جو خطرناک علامت تھی۔ علامات کو دیکھتے ہوئے ڈاکٹروں نے لیو کا دوسرا آپریشن کرنے کا فیصلہ کیا آپریشن کے بعد لیو کی کھوپڑی کی ہڈی کو متعدد حصوں میں علیحدہ کیا گیا اور پھر آہنی بولٹس کی مدد سے جوڑدیا گیا۔

لیو کی ماں کا کہنا تھا کہ ڈاکٹروں نے کھوپڑی کے دونوں جانب کی ہڈیوں میں سلائیڈرز نصب کیے گئے اور دن میں دو مرتبہ ان سلائیڈرز کو ایک خصوصی اوزار کی مدد سے حرکت دی جاتی رہی تاکہ دماغ پر پڑنے والے دباؤ کو کم کیا جاسکے۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ 28 دن ان کی زندگی کے ناقابل فراموش دن تھے جو بہت تکلیف میں گزارے لیکن ڈاکٹروں کی محنت اور بہترین ییشہ ورانہ مہارت سے اب لیو ہچنسن بہت تیزی کے ساتھ صحت یاب ہورہا ہے۔

About Admin

Check Also

آنتوں کے جراثیم بجلی بھی بناتے ہیں!

کیلیفورنیا(مانیٹرنگ ڈیسک) سائنس دانوں نے انکشاف کیا ہے کہ آنتوں اور نظامِ ہاضمہ میں پائے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: