Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / پاکستان / مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کا وکلاءکے روپ میں عدالت پر حملے کا انکشا ف

مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کا وکلاءکے روپ میں عدالت پر حملے کا انکشا ف

اسلام آباد(نیوز رپورٹر) مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پر فرد جرم عائد کے دن پاکستان مسلم لیگ (ن) وکلاءونگ کے ممبران اور مسلم لیگی کارکنوں کا کمرہ احتساب عدالت میں ہلڑ بازی اور شدید ہنگامہ ۔ احتساب عدالت کے جج بشیر چوہدری نے خطرہ کو بھانپتے ہوئے عدالت چھوڑ کر اپنے چیمبر میں چلے گئے فاضل جج نے مریم نواز مقدمہ کاریکارڈ ضائع ہونے اور مسلم لیگی ورکروں کی طرف سے اسے قبضہ میں لئے جانے کے خطرہ کے پیش نظر ریکارڈ مقدمہ بھی خود اٹھا کر چیمبر میں لے گئے فاضل عدالت نے مریم نواز اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر فرد جرم عائد کرنے کی کارروائی انیس اکتوبر تک ملتوی کردی اور عدالت کے احاطہ میں مسلم لیگی ورکروں کے ہنگامہ کے واقعہ کی تحقیقات کی ذمہ داری آئی جی اسلام آباد کے حوالے کرکے رپورٹ طلب کرلی ہے احتساب عدالت میں مسلم لیگیوں کے ہنگامہ کے واقعہ کو پاکستان کی میڈیا نے بریکنگ نیوز کے طور پر نشر کیا جبکہ تجزیہ کاروں نے عدالت پر حملے کو ملک کا سیاہ دن قرار دے دیا اور کہا کہ شریف خاندان نے ریاست کی رٹ کو چیلنج کیا ہے اداروں کو نوٹس لینا چاہیے۔ مسلم لیگ (ن) کے کارکنوں کا وکلاءکے روپ میں عدالت پر حملے کے دوران احتساب عدالت کے معزز جج نے بھاگ کر جان بچائی ریکارڈ چوری کرنے کی کوشش پر نیب عدالتی عملے اور قانون کا درس دینے والوں کے درمیان ہاتھا پائی ہونے کی وجہ سے سماعت 19اکتوبر تک ملتوی کردی گئی ۔ تفصیلات کے مطابق گزشتہ جمعہ کے روز شریف خاندان کے خلاف نیب کی جانب سے احتساب عدالت میں فلیگ شپ لندن پراپرٹی غیر قانونی اثاثہ جات اورمنی ٹریل کے حوالے سے دائر ریفرنسپر احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے سماعت کی دوران سماعت سابق وزیراعظم نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز اپنے شوہر کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے ہمراہ کارکنوں اور مسلم لیگ نواز کے وکلاءکے قافلے کی صورت میں کمرہ عدالت پہنچی اور کئی وکلاءکے رویئے میں کارکنوں نے کمرہ عدالت میں مریم نواز کے ساتھ سلفیاں بنانا شروع کردی اتنے میں کمرہ عدالت میں وکلاءکا ایک گروپ داخل ہوا اور ہلڑ بازی شروع کردی اور کمرہ عدالت سے شریف خاندان کیخلاف دائر ریفرنسز کا ریکارڈ چوری کرنے کی کوشش کی جس پر نیب کے ڈپٹی پراسکیوٹر جنرل سردار مظفر عباسی اور وکلاءکے درمیان ہاتھا پائی شروع ہوگئی اور معززجج بھاگ کر چیمبر میں چلے گئے بعد ازاں عدالت نے آئی جی اسلام آباد کو واقعہ کی انکوائری کا حکم دیتے ہوئے کیس کی مزید سماعت 19اکتوبر تک ملتوی کردی واضح رہے کہ شریف خاندان کی گزشتہ پیشی کے موقع پر مسلم لیگ نواز کے وزراءوکلاءاور کارکنوں نے رینجرز حکام پر الفاظوں کے حملے شروع کردیئے جبکہ مریم نواز اور کیپٹن صفدر کی پیشی کے موقع پر ملزمان پر ممکنہ طورپر فرد جرم عائد کئے جانا تھی مسلم لیگ نواز کے وکلاء رہنما صدیق اعوان ایڈووکیٹ کی جانب سے پولیس انسپکٹر کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا جس کے بعد قانون کا درس دینے والوں اور محافظوں کے درمیان صورتحال مزید کشیدہ ہوگئی دوسری جانب سابق وزیراعظم کی صاحبزادی کی جوڈیشل کمپلیکس میں پیشی کے موقع پر پولیس کی جانب سے سکیورٹی کے سخت ترین انتظامات کئے گئے اور گزشتہ سماعت کی طرز مسلم لیگ کے کارکنوں کو گولڑہ موڑ اور جی الیون کے سروس روڈ پر رکاوٹیں کھڑی کرکے روک دیا گیا لیکن گزشتہ سماعت پر بڑی تعداد میں جعلی وکلاءکے داخل ہونے پر پولیس اور وکلاءکے درمیان ہاتھا پائی شروع ہوگئی اور کئی وکلاءمریم نواز کے ساتھ ہی احاطہ عدالت میں پہنچ گئے اور جوڈیشل کمپلیکس کے داخلی راستے پر ہنگامہ کرتے ہوئے کمرہ عدالت تک پہنچ گئے بعد ازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری نے کہا کہ منصوبہ بندی کے تحت عدالت پر حملہ کئے جانے کے حوالے سے آئیں بائیں شائیں کرتے ہوئے اس حوالے سے پوچھے گئے سوالات پر بات کرنے سے گریز کیا ان کا کہنا تھا کہ واقعہ کی انکوائری ہوگی ذمہ داران کو سامنے لایا جائے گا

About Admin

Check Also

JusticeSyedMansoorAliShah

خواتین پرتشدد کے کیسز کی سماعت کیلیے پہلی خصوصی عدالت قائم

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)چیف جسٹس ہائیکورٹ نے خواتین پر تشدد کے خلاف مقدمات کی سماعت کے لیے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: