Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / صحت / خودکلامی کریں ،یادداشت بڑھائیں

خودکلامی کریں ،یادداشت بڑھائیں

واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک)امریکی ماہرین کا کہنا ہے کہ خود کلامی پاگل پن نہیں بلکہ ذہن اور یادداشت میں مثبت کردارادا کرتی ہے، خود سے باتیں کرنا بالکل نارمل اورعام سی بات ہے، ایسے لوگوں کا دماغ بالکل درست ہوتا ہے اورانہیں پاگل نہیں کہا جاسکتا بلکہ خود کلامی انسانوں کےلئے صحت مند ہے۔

مشی گن اسٹیٹ یونیورسٹی میں 89 رضاکاروں پر تحقیق کی گئی جس میں ان سے کہا گیا کہ وہ اپنی زندگی کے ایسے واقعات یاد کریں کہ جب انہیں شدید اعصابی تناؤ اورناگوارحالات کا سامنا تھا اوران کے ذہنوں پرمنفی خیالات بھی مسلط تھے۔

اس دوران کچھ رضاکاروں کو اعصابی تناﺅاورمنفی خیالات پیدا کرنے والی تصاویر بھی دکھائی گئیں۔ الیکٹروانسیفالو گرافی (ای ای جی) اور ایف ایم آر آئی نامی تکنیکوں کی مدد سے ان کے دماغوں میں اعصابی سرگرمیوں پر بھی نظررکھی گئی جس سے ظاہرہواکہ ایسے واقعات کو یاد کرتے وقت ان افراد میں اعصابی تناؤ بڑھ گیا تھا۔

اس کیفیت میں مبتلا کرنے کے بعد رضاکاروں سے کہا گیا کہ وہ اپنے آپ سے باتیں کرتے ہوئے یہ کیفیت ختم کرنے کی کوشش کریں۔ رضاکاروں نے اپنا نام لے کر خودکلامی کی تو ان میں اعصابی تناؤ کی کیفیت اور منفی جذبات کی شدت کم ہونے لگی۔ امریکی ماہر نفسیات کے مطابق خود کلامی کرنے والے افراد بہترطور پرمشکلات پر قابو پاسکتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے خود کلامی پاگل پن نہیں بلکہ ذہن اور یادداشت کی ٹریننگ میں مثبت کردار ادا کرتی ہے خاص طور پر عمر رسیدہ افراد کو باقاعدگی سے خود کلامی کرنا چاہئے تاکہ دیگر افراد کو اپنی طرف متوجہ کر سکیں۔

About Admin

Check Also

obesity women

موٹاپا چھاتی کے کینسر کی بڑی وجہ ہے، ماہرین طب

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سعید قریشی کا …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: