Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / اہم ترین / اثاثہ جات ریفرنس: احتساب عدالت نے اسحاق ڈار پر فرد جرم عائد کردی

اثاثہ جات ریفرنس: احتساب عدالت نے اسحاق ڈار پر فرد جرم عائد کردی

اسلام آباد(نیوز رپورٹر) احتساب عدالت نے آمدن سے زائد اثاثوں کے نیب ریفرنس میں وزیر خزانہ اسحاق ڈار پر فرد جرم عائد کردی تاہم اسحاق ڈار نے صحت جرم سے انکار کردیا جس کے بعد عدالت نے استغاثہ کے گواہان کو طلب کرتے ہوئے سماعت 4 اکتوبر تک ملتوی کردی۔،اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس آ مدن سے زائد اثاثوں کا ہے اور کیس میں سپریم کورٹ کی آ بزرویشن کے مطابق اسحاق ڈار اور ان کے اہل خانہ کے831 ملین روپے کے اثاثے ہیں جو مختصر مدت میں 91 گنا بڑھے۔نیب ریفرنس پر اسحاق ڈار کے خلاف بدھ کو چوتھی سماعت ہوئی جس میں اسلام آ باد کی احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے ملزم پر عائد الزامات پڑھ کر سنائے اور فرد جرم عائد کی۔عدالت نے ملزم پر فرد جرم عائد کرنے کے بعد ضابطے کی کارروائی شروع کرتے ہوئے نیب کو الزامات ثابت کرنے کا حکم دیا جس پر نیب حکام نے 16 گواہان کی فہرست عدالت میں جمع کرادی تاہم ان گواہان کے نام سامنے نہیں آسکے جو عدالتی ریکارڈ کا حصہ ہیں۔عدالت نے اسحاق ڈار سے الزامات کے بارے میں پوچھا تو انہوں نے صحت جرم سے انکار کردیا۔اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ میرے تمام اثاثے آ مدن سے مطابقت رکھتے ہیں، مجھ پر عائد الزامات بے بنیاد ہیں جنہیں عدالت میں ثبوتوں کے ذریعے ثابت کروں گا۔وزیر خزانہ نے کہا کہ میں بے گناہ ہوں، عدالت میں اپنی بے گناہی ثابت کروں گا اور الزامات کا دفاع کروں گا۔فرد جرم عائد ہونے کے بعد اسحاق ڈار کے وکلا نے ان کی حاضری سے استثنا کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ ان کے موکل پر فرد جرم عائد ہوچکی ہے اس لیے اب ان کا عدالت آنا ضروری نہیں ہے اس لیے اب انہیں حاضری سے استثنا دیا جائے، ان کے روزانہ عدالت آنے سے معمولات متاثر ہوں گے جب کہ عدالت آنے سے دیگر مسائل کا سامنا بھی ہے تاہم عدالت جب طلب کرے گی وہ پیش ہوں گے۔نیب نے اسحاق ڈار کے وکیل کی جانب سے حاضری سے استثنا کی مخالفت کردی تاہم عدالت نے اس حوالے سے کوئی فیصلہ نہ سناتے ہوئے استغاثہ کے 2 گواہان کو طلب کرنے کے لیے طلبی کے نوٹس جاری کردیئے اور کیس کی مزید سماعت 4 اکتوبر تک ملتوی کردی۔احتساب عدالت میں ملزم پر فرد جرم عائد کیے جانے کے بعد اب کیس کا باقاعدہ ٹرائل ہوگا اور عدالت استغاثہ کو نوٹس جاری کرے گی کہ وہ اپنا کیس قائم کرے، شہادتیں دے اور گواہان پیش کرے جب کہ عدالت ڈیفنس کو بھی صفائی پیش کرنے کا موقع دے گی۔احتساب عدالت نے پاناما کیس کے فیصلے میں سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں ملزمان کے خلاف مقدمات کی سماعت کے آ غاز کے بعد 6 ماہ کے اندر مقدمات پر فیصلہ کرنا ہے۔وفاقی وزیر خزانہ کی بدھ کوعدالت میں پیشی کے موقع پر جوڈیشل کمپلیکس اور اس کے اطراف سخت سیکیورٹی انتظامات کیے گئے ہیں۔سخت سیکورٹی کے باعث میڈیا نمائندوں اور سائلین کو باہر روک لیا گیا جب کہ نیب کے ڈپٹی پراسیکوٹر جنرل اور اسپیشل پراسیکیوٹر کوبھی روکا گیا تاہم انہیں تھوڑی دیر بعد جانے کی اجازت دے دی گئی۔عدالت کے باہر رش کے باعث پولیس نے عدالت کے گیٹ بند کررکھے تھے، عدالت کے باہر دھکم پیل کے بعد اسحاق ڈار احاطہ عدالت میں داخل نہ ہوسکے جس کے باعث وہ واپس اپنی گاڑی میں بیٹھ گئے تاہم عدالت کے باہر بدنظمی کی وجہ سے اسحاق ڈار عقبی راستے سے احتساب عدالت کے احاطے میں داخل ہوئے۔پولیس کی جانب سے وکلااور صحافیوں کو عدالت میں داخلے کی اجازت نہ ملنے پر عدالت کے باہر شدید بدنظمی ہوئی اور بعض وکلا عدالت کا گیٹ پھلانگ کر احاطہ عدالت میں داخل ہوگئے۔صحافیوں کو عدالت میں داخل ہونے کی اجازت نہ ملنے پر صحافی عدالت میں ہونے والی کارروائی سے لاعلم رہے اور عدالت میں موجود وکلا نے معلومات حاصل کرتے رہے۔اسحاق ڈار کے خلاف نیب ریفرنس پر پہلی سماعت 14 اور دوسری 20 ستمبر کو ہوئی جس روز ملزم کی عدم پیشی پر عدالت نے قابل ضمانت وارنٹ جاری کیے تھے۔25 ستمبر کو کیس کی تیسری اور گزشتہ سماعت پر اسحاق ڈار کے وکیل کی جانب سے ریفرنس کے جائزے کے لیے کم از کم 7 دن دینے کی استدعا مسترد کردی گئی تھی۔عدالت نے ملزم کو 23 جلدوں پر مشتمل ریفرنس کی نقول فراہم کر کے وصولی کی رسید پر دستخط کرائے تھے اور فرد جرم عائد کرنے کے لیے آ ج کی تاریخ مقرر کی تھی۔واضح رہے کہ نیب نے پاناما کیس میں سپریم کورٹ کے 28 جولائی کے فیصلے کی روشنی میں شریف خاندان اور اسحاق ڈار پر ریفرنس بنائے ہیں جب کہ شریف خاندان کے خلاف 3 ریفرنسز دائر کیے گئے ہیں جس میں میاں نوازشریف پر فرد جرم کے لیے 2 اکتوبر کی تاریخ مقرر ہے۔اسلام آ باد کی احتساب عدالت نے کیس میں گزشتہ روز پیش نہ ہونے پر نوازشریف کے بچوں اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے۔

About Admin

Check Also

ishaq dar

اسحاق ڈارکے خلاف اثاثہ جات کیس، گواہوں کے بیان ریکارڈ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وزیرخزانہ اسحاق ڈار کے خلاف نیب ریفرنس میں گواہوں کے بیان ریکارڈ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: