Download http://bigtheme.net/joomla Free Templates Joomla! 3
Home / بین الاقوامی / میانمار میں تشدد کی نئی لہر، 20 گھر نذر آتش، مسجد کے قریب بم دھماکہ

میانمار میں تشدد کی نئی لہر، 20 گھر نذر آتش، مسجد کے قریب بم دھماکہ

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک)میانمار کی ریاست رخائن میں تشدد کی تازہ لہر میں 20 گھرنذرآتش کر دیے گئے اور ایک مسجد کے قریب بم دھماکا بھی ہوا۔رخائن میں تشدد کی نئی لہر اس وقت سامنے آئی ہے جب آنگ سان سوچی کی جانب سے ایک ہی روز قبل یہ اعلان کیا گیا تھا کہ فوج نے سرحدی علاقوں میں ‘آپریشن’ کو روک دیا ہے۔

خیال رہے کہ میانمار کی فوج نے دعویٰ کیا تھا کہ وہ 25 اگست کو پولیس پر ہونے والے حملوں کے بعد روہنگیا انتہاپسندوں کو ختم کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔دوسری جانب بنگلہ دیش کی طرف ہجرت کرنے والے بے گھر افراد کا کہنا تھا کہ میانمار کے فوجی اور بدھ مت کے انتہاپسند انھیں تشدد کا نشانہ بناتے تھے اور ان کے پورے گاؤں کو نذرآتش کردیتے تھے۔اقوام متحدہ نے میانمار میں فوج کی مہم کو ‘فرقہ ورایت’ سے تعبیر کیا تھا۔حکومت کے اعلامیے کے مطابق تازہ واقعہ رخائن کے گایوں مائونگڈاز کیائین چونگ میں پیش آیا جہاں 20 کے قریب گھر آگ کی لپیٹ میں آگئے۔اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ ‘سیکیورٹی اراکین نے جائے وقوعہ کا دورہ کیا اور آگ کی نوعیت معلوم کی،معاملے کی تفتیش کی’۔

حکومت کاکہنا ہے کہ دوسرا واقعہ می چونگ زے گاؤں میں ایک مسجد کے قریب بم دھماکا ہوا۔ان واقعات کی ذمہ داری ‘دہشت گردوں ‘ پر عائد کردی گئی ہے تاہم پولیس پر حملہ کرنے والے گروپ اراکان روہنگیا سلویشن آرمی (اے آر ایس اے) کے حوالے سے بیان میں کچھ واضح نہیں کیا گیا۔رخائن کے کے دونوں گائوں میں پیش آنے والے واقعات میں تاحال کسی قسم کے جانی نقصان کی رپورٹ موصول نہیں ہوئی ہے۔

About Admin

Check Also

robert mugabe

زمبابوے کے صدر رابرٹ موگابے پارٹی سربراہی سے برطرف

ہرارے(مانیٹرنگ ڈیسک)زمبابوے کی حکمراں جماعت نے ملک کے صدر رابرٹ موگابے کو پارٹی کی سربراہی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

%d bloggers like this: